روس نے برطانیہ پر کرونا ویکسین کا ڈیٹا چوری کرنے کا الزام لگا دیا

روس نے برطانیہ پر کرونا ویکسین کا ڈیٹا چوری کرنے کا الزام لگا دیا
Loading...

لندن: برطانیہ کا کہنا ہے کہ روس کرونا ویکسین کا ڈیٹا ہیک کرنے اور چوری کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق برطانیہ کے نیشنل سائبر سیکورٹی سینٹر (این سی ایس سی) نے کہا کہ روسی ریاست کے حمایت یافتہ ہیکرز دنیا بھر کے تعلیمی اور دوا ساز اداروں سے کرونا ویکسین اور علاج معالجے کا ڈیٹا چوری کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

برطانیہ، امریکا اور کینیڈا کے ایک مشترکہ بیان میں ان سائبر حملوں کی ذمہ داری APT29 گروپ ڈالی گئی ہے، جسو ’کوزی بیئر‘ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، جس کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ یہ روسی انٹیلی جنس سروسز کے ایک حصے کے طور پر آپریٹ ہوتا ہے۔

این سی ایس سی کے آپریشن ڈائریکٹر پال چِچسٹر کا کہنا تھا کہ ہم کرونا وائرس کی عالمگیر وبا کے خلاف جنگ لڑنے والے اس اہم کام پر ہونے والے حقیر حملوں کی مذمت کرتے ہیں۔

برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب نے کہا کہ روسی انٹیلی جنس سروسز کا وبا پر ہونے والے کام کو ہدف بنانا کلی طور پر ناقابل قبول ہے، جہاں باقی مفاد پرستی میں مبتلا نظر آتے ہیں وہاں برطانیہ اپنے اتحادیوں کے ساتھ عالمی صحت کے تحفظ کے لیے ایک ویکسین کی تلاش میں جُتا ہوا ہے۔

Loading...

دنیا بھر میں کرونا مریضوں کی تعداد 1 کروڑ 32 لاکھ سے زائد ہوگئی

این سی ایس سی کا کہنا تھا کہ مذکورہ ہیکرز گروپ نے حملوں کے لیے متعدد تیکنیکس اور اوزار اختیار کیے، ان میں اسپیئر پِشنگ اور کسٹم میلویئر بھی شامل ہیں۔

ادھر برطانوی وزارت خارجہ نے الزام لگایا ہے کہ 2019 میں روس نے غیر قانونی طور پر حاصل کی گئی دستاویزات کے ذریعے برطانوی انتخابات میں مداخلت کی، برطانوی انتخابات میں روس کی مداخلت کی کوشش ناقابل قبول ہے۔

برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب نے کہا کہ برطانیہ میں مداخلت کرنے کی کوششیں مکمل طور پر ناقابل قبول ہے، برطانوی حکومت نے وثوق کے ساتھ روس کی جانب سے برطانوی جمہوری نظام میں مداخلت کا الزام عائد کیا ہے۔

(Visited 20 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں