پی ٹی اے نے ٹک ٹاک کو آخری وارننگ دے دی

ٹک ٹاک
Loading...

پی ٹی اے نے سوشل میڈیا ایپ ٹک ٹاک کو حتمی وارننگ جاری کردی، ٹک ٹاک پر غیراخلاقی مواد ہونے پر پہلے بھی وارننگ جاری کی گئی تھی۔

پی ٹی اے حکام کا کہنا ہے کہ مختلف طبقات کی جانب سے ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی ویڈیوز کی شکایات مل رہی ہیں۔ وارننگ پر ٹک ٹاک کی جانب سے تحریری جو اب تسلی بخش نہیں ہے۔

پی ٹی اے نے وارننگ جاری کرتے ہوئے کہا کہ ٹک ٹاک سوشل میڈیا نیٹ ورک سے تمام غیراخلاقی ویڈیوز ہٹائی جائیں اور ٹک ٹاک پر آئندہ ایسی ویڈیوز اپ لوڈ نہ ہونے کی یقین دہانی کرائی جائے۔

پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی نے سوشل میڈیا ایپ بیگو کو فوری طور پاکستان میں بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے، بیگو کو غیر اخلاقی مواد نشر کرنے کے باعث بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ ٹک ٹاک، بیگو نے غیر اخلاقی، نازیبا مواد نہیں ہٹائے جس کے بعد ملکی قوانین کے تحت بیگو ایپ بلاک کردی گئی ہے جبکہ غیراخلاقی نازیبا مواد پر ٹک ٹاک کو حتمی وارننگ جاری کردی گئی ہے۔

ٹک ٹاک اور بیگو ایپ سے متعلق ایک سرکاری عہدیدار نے بتایا کہ ٹک ٹاک نوجوان لڑکیوں، کم عمربچیوں کو پرموٹ کررہا تھا، ٹک ٹاک پر نوجوان بچوں کو بےتحاشہ وائرل کیا جارہا تھا۔

Loading...

سی پیک سے ملک میں تعمیر وترقی کا انقلاب برپا ہوگا، عاصم سلیم باجوہ

سرکاری عہدیدار کا کہنا تھا کہ بچے ٹک ٹاک پر ویڈیوز وائرل کے اثرات سے نمٹنے سے قاصر تھے اور بچیوں کی ویڈیوز پر 40 سال سے زائد عمر کے مردوں کے کمنٹس نمایاں تھے۔

سرکاری عہدیدار نے کہا کہ ٹک ٹاک پر نوجوان بچیوں کی ویڈیوز بھی لیک کی جارہی تھیں، حکومت پر معاشرے کے ہر شہری کے تحفظ کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ شہری سوشل روابط کےلیے یوٹیوب، فیس بک، انسٹاگرام جیسی ایپ استعمال کریں۔

خیال رہے کہ دو روز قبل پاکستان تحریک انصاف کی رہنما اور رکن ایوان سیمابیہ طاہر نے بھی پنجاب اسمبلی میں ٹک ٹاک پر پابندی کے حوالے سے قرار داد جمع کرائی تھی۔

سیمابیہ طاہر کی جانب سے جمع کرائی جانے والی قرار داد کے متن میں لکھا گیا ہے کہ ’پاکستان میں ٹک ٹاک ویڈیو کے ذریعے مذاہب کا مذاق بنایا جارہا ہے اور موبائل ایپلیکیشن کی وجہ سے بے حیائی بھی پھیل رہی ہے‘۔

(Visited 32 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں