سپین میں کرونا کے 50 فیصد سے زائد مریض اس بیماری میں مبتلا ہورہے ہیں…!

Loading...

سپین کے ماہرین نے کرونا وائرس کے مریضوں کے متعلق ایک حیران کن انکشاف کیا ہے. ان ماہرین کا کہنا ہے کہ سپین میں جو لوگ کرونا وائرس سے متاثر تھے ان میں سے آدھے سے زیادہ لوگ اس وقت ذہنی مسائل کا شکار ہو چکے ہیں.

کرونا وائرس نے ان کی ذہنی صحت پر برے اثرات مرتب کیے ہیں. وائرس نے لوگوں کو دماغی بیماریوں میں مبتلا کر دیا ہے. سپین کی نیورولوجی ایسوسی ایشن نے پورے ملک میں سے کرونا وائرس کے مریضوں کا ڈیٹا جمع کیا.

کرونا وائرس کی ایک اور نئی علامت سامنے آگئی… !

اس ڈیٹا سے ایسوسی ایشن نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ اسپین میں کرونا وائرس کے مریضوں میں سے 60 فیصد مریض اس وقت ذہنی بیماریوں میں مبتلا ہیں.

Loading...

یاد رہے دنیا بھر میں کورونا وائرس سے اب تک کی 6 لاکھ 13 ہزار 213 افراد ہلاک ہوچکے ہیں،

کرونا وائرس سے برازیل میں مزید 718، امریکا 545 اور میکسیکو میں 301 ہلاکتیں ہوئیں، بھارت میں مزید 596 اور ایران میں 217 افراد لقمہ اجل بنے، امریکا میں مزید 62 ہزار، برازیل میں 21 ہزار، بھارت میں 36 ہزار، روس میں 5 ہزار سے زائد اور جنوبی افریقا میں 9 ہزار کیسز سامنے آئے۔

کرونا وائرس ان کے ذہنوں پر براہ راست اثر کر رہا ہے کئی لوگوں کی ذہنی حالت اس قدر سنگین ہوچکی ہے کہ وہ سٹروک کا شکار ہیں. اب تک 1200 سے زیادہ مریضوں کو سٹروک ہو چکا ہے.

(Visited 33 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں