ہارمون کے ذریعے کرونا کا علاج کیسے کیا جائے گا…؟

ہارمون کے ذریعے کرونا کا علاج
Loading...

برطانیہ کی ایک کمپنی نے یہ اعلان کیا ہے کہ انہوں نے ایک خاص قسم کے ہارمونز کو استعمال کرتے ہوئے تجربہ کیا ہے اور ہارمون کے ذریعے کرونا کا علاج کرنے کے لئے کلینکل ٹرائل میں کامیابی حاصل کرلی ہے.

ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے ان تجرباتی مراحل میں تقریبا 110 افراد کو شامل کیا اور ہارمون کے ذریعے کرونا کا علاج کرنے کی یہ کوشش مارچ سے جاری تھی. برٹش ماہرین نے کرونا کا علاج کرنے کے لیے ایک خاص ہارمون کو استعمال کیا ہے. اس ہارمون کا نام انٹرفیرون بی-ٹا ہے. یہ ہارمون انسان کے جسم میں قدرتی طور پر موجود ہوتا ہ اور یہ بیماریوں کے خلاف لڑنے کے لئے انسان کے مدافعتی نظام کو مضبوط بناتا ہے.

ڈاکٹرز کچھ امراض کے علاج کے لیے اس ہارمون کو انجکشن کے ذریعے مریض کے جسم میں داخل کرتے ہیں. اس طرح اس ہارمون کا استعمال دوا کے طور پر کیا جاتا ہے.

Loading...

کرونا وائرس کی ایک اور نئی علامت سامنے آگئی… !

کرونا وائرس کے علاج کے لیے اس ہارمون کو ایک محلول کی شکل میں تیار کیا گیا ہے اور اس کو بخارات میں تبدیل کرکے مریض سانس کے ذریعے پھیپھڑوں تک منتقل کریں گے. ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم نے 3 مہینے میں اپنے تجربات میں جن مریضوں پر اس ہارمون کا استعمال کیا ان کا کرنا سے صحت یاب ہونے کا دورانیہ باقی مریضوں سے مختلف تھا.

ہارمون والے مریض زیادہ جلدی صحت یاب ہوگئے تھے اور ان کا مدافعتی نظام بھی مضبوط ہو گیا تھا. ماہرین کا کہنا ہے کہ اب ہماری کوشش ہے کہ ہم اس علاج کے فیز 3 میں کامیابی حاصل کر لیں تاکہ اس کی منظوری عالمی سطح پر دی جا سکے لیکن اس عمل میںابھی بھی مزید میں نے 6 مہینے لگ سکتے ہیں.

(Visited 64 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں