اٹارنی جنرل کی جسٹس فائزعیسیٰ کیخلاف حکومتی نمائندگی سے معذرت

حکومتی
Loading...

نئے اٹارنی جنرل آف پاکستان بیرسٹر خالد جاوید خان نے جسٹس قاضی فائز عیسی کے خلاف حکومتی ریفرنس میں حکومت کی نمائندگی سے معذرت کر لی ہے۔

اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کا کہنا ہے کہ اس کیس میں مفادات کا ٹکراؤ ہے۔ حکومت نے سپریم کورٹ میں اپنی مرضی کے دلائل دینے پر سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان سے استعفیٰ طلب کر لیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اٹارنی جنرل خالد جاوید خان نے آپ سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائر عیسیٰ سے متعلق کیس میں حکومت کی جانب سے دلائل دینے تھے۔ تاہم اب اطلاعات ہیں کہ اٹارنی جنرل خالد جاوید خان نے حکومتی نمائندگی کرنے سے معذرت کر لی ہے۔

اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کا کہنا ہے کہ اس کیس میں مفادات کا ٹکراؤ ہے۔ حکومت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مقدمے میں وکیل مقرر کرنے کی درخواست دی ہے۔

Loading...

پاکستان دنیا کو محفوظ ماحول کی فراہمی کے لیے قربانیاں دے رہا ہے، آرمی چیف

اٹارنی جنرل کا مؤقف ہے کہ اس کیس میں مفادات کا ٹکراو ہے، حکومت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مقدمے میں وکیل مقرر کرنے کی درخواست دی ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ اس درخواست کو قبول کیا جائے

واضح رہے کہ حکومت نے سپریم کورٹ میں اپنی مرضی کے دلائل دینے پر سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان سے استعفیٰ طلب کر لیا تھا۔

(Visited 39 times, 1 visits today)
loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں