پی سی بی نے بال ٹیمپرنگ کا الزام مسترد کر دیا

لاہور: پی سی بی نے نام لیے بغیر سرفراز احمد کا بال ٹیمپرنگ سے متعلق بیان مسترد کر دیا۔

پشاور زلمی کیخلاف میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد نے بال ٹیمپرنگ کی بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ تحریری شکایت کردی،

اس حوالے سے پی سی بی کی جانب سے جاری کی جانے والی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ گیند کی حالت کو تبدیل کرنے سے متعلق میچ ریفری روشن ماہنامہ کو کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی،

کوڈ آف کنڈکٹ کے آرٹیکل 3.2 کی شق 3.2.2 کے تحت ٹیم منیجر کی جانب سے باضابطہ شکایت میچ ختم ہونے کے 48 گھنٹوں کے اندر درج کروانا لازمی ہوتا ہے۔

چیف ایگزیکٹیو پی سی بی وسیم خان کا کہنا ہے کہ ہمیں معلوم ہے کہ بال ٹیمپرنگ گیند کی حالت تبدیل کرنے سے متعلق بیان جاری کرنے سے پہلے نہ تو ٹھوس شواہد فراہم کیے گئے اور نہ ہی باضابطہ درخواست جمع کروائی گئی

بولرز اچھی گیندیں کر رہے ہیں، بس ایک جیت کی ضرورت ہے، سہیل اختر

مخصوص طریقہ کار اختیار کیے بغیر اتنا غیرذمہ دارانہ بیان جاری کرتے ہوئے ایونٹ کی ساکھ کو مجروح اور غیرملکی کرکٹرز کو شکوک و شبہات میں ڈالا گیا، کھلاڑیوں سے احتیاط برتنے اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے کی درخواست کرتے ہیں۔

وسیم خان نے کہا کہ پی ایس ایل کیلیے امپائرز کا بہترین پینل موجود ہے، جس کی ہر معاملے پر گہری نظر ہے، اگر امپائرز  پینل اگیند میں مصنوعی تبدیلی دیکھے تو وہ یقیناً کوڈ آف کنڈکٹ کے تحت اس پر کارروائی کریگا، تمام شرکا سے درخواست ہے کہ وہ کھیل کی روح کو برقرار رکھتے ہوئے کرکٹ پر توجہ دیں۔

(Visited 12 times, 1 visits today)

Comments

comments

بال ٹیمپرنگ,

اپنا تبصرہ بھیجیں