30 جون تک کرونا کے متوقع کیسز میں 75 ہزار کی کمی ہوگئی، اسد عمر

اسد عمر

اسلام آباد: وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا ہے کہ 30 جون تک کورونا وائرس کے متوقع کیسز میں 75 ہزار کی کمی ہوگئی۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے ملک میں کورونا وائرس کی صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ کورونا کیسز بڑھنے پر لوگوں نے حفاظتی تدابیر اختیار کی ہیں، کورونا کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں اور ہم نے معاشرے میں ذمہ دارانہ کردار ادا کرنا ہوگا، پہلے 30 جون تک 3 لاکھ متوقع کیسز تھے جو اب کم ہوکر 2 لاکھ 25 ہزار ہوگئے ہیں۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ ہم نے 14جون کو حقائق سامنے رکھے تھے اور اندازہ تھا کہ 30 جون تک کورونا کیسز کی تعداد 3 لاکھ تک پہنچ سکتی ہے، لیکن آج اجلاس میں ہم نے ماہرین کی رائے کا جائزہ لیا اور اب موقع کیسز کی تعداد کم ہوگئی ہے، جو تین لاکھ تک پہنچنے کا خدشہ تھا وہ سوا دو لاکھ تک پہنچنے کا امکان ہے۔

اسد عمر نے بتایا کہ احتیاطی تدابیر اختیار نہ کی جائیں تو وبا تیزی سے پھیل سکتی ہے اور حالات خراب ہوسکتے ہیں، اگر سب لوگ صحیح کام کریں اور حکومت سمیت سب اپنی ذمہ داری پوری کریں تو پھیلاؤ کو روکنے میں خاطر خواہ کامیاب ہوسکتی ہے، اگر ہم سب اپنا کردار ادا کریں تو وبا کے پھیلاؤ کو کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔

کورونا وائرس نے لوگوں کو راتوں رات ارب پتی بنا دیا، چیف جسٹس

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ اگر ہم احتیاط نہیں کریں گے تو حالات خراب ہوسکتے ہیں، صحت کے نظام کو بہتر بنایا جارہا ہے، صورتحال ایسی نہیں کہ صحت کا نظام مفلوج ہوتا نظر آئے، کوشش کررہے ہیں کہ کاروبار زندگی بھی چلتا رہے گا،

غریب لوگ بھی متاثر نہ ہوں اور ہم عوام کی صحت کی حفاظت بھی کریں، میں یہ نہیں کہہ رہا کہ کورونا کا خطرہ ٹل گیا تاہم پچھلے دو ہفتے میں حالات میں بہتری آئی ہے اور مزید آئے گی۔

(Visited 16 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں