سوشل میڈیا پر لائکس کی کمی آپ کو بڑی مشکل میں ڈال سکتی ہے ….!

Loading...

ایک نئی ریسرچ کے ذریعے ماہرین نے آج کل کے دور میں سوشل میڈیا استعمال کرنے والے نوجوانوں کے متعلق حیران کن انکشافات کیے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر سوشل میڈیا استعمال کرنے والے نوجوانوں کو ان کی امید اور پسند کے مطابق لائکس نہ ملے تو وہ اداس ہوتے ہیں اور ڈپریشن کا شکار بن جاتے ہیں۔ ماہرین نے اس بات کا انکشاف چائلڈ ڈویلپمنٹ کے نام سے شائع ہونے والے ایک جریدے میں کیا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم نے آن لائن رہتے ہوئے مختلف طرح کے تین تجربے کیے ہم نے اپنے تجربے میں شامل نوعمر لڑکیوں اور لڑکوں سے کہا کہ وہ نیا پروفائل بنائیں اور وہ اپنے ہم عمر لوگوں کے اسٹیٹس لائک بھی کرے اور ان کو دیکھیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ تجرباتی عمل میں شامل تمام لڑکے اور لڑکیوں کے پروفائل کو ان کے لائکس کی بنیاد پر اوپر نیچے رکھا گیا تھا یعنی جن لوگوں کے لائک زیادہ تھے ان کا نام اوپر اور جن کے لائٹس کم تھے ان نو عمر لوگوں کا نام نیچے لکھا گیا۔

ان کا کہنا ہے کہ ہم نے یہ ایک تجرباتی عمل ایک سوفٹ ویئر کے ذریعے کیا یعنی ہم اس سوفٹ ویئر کے ذریعے اپنی مرضی سے کسی کو زیادہ لائک دے رہے تھے اور کسی کو کم ہم نے اس تجرباتی عمل کو دو بار دہرایا اور اس کے بعد ہم نے تجربے میں شامل تمام لڑکے اور لڑکیوں سے ایک سوالنامہ بھی پر کروایا۔

loading...

اس سوالنامے نے نوجوانوں کے موڈ کا اظہار کردیا یعنی جن لڑکے اور لڑکیوں کو زیادہ لائکس ملے تھے ان کی خوشی سوالنامے سے ظاہر ہورہی تھی۔ اس کی نسبت جن لوگوں کے لائکس کم تھے انہوں نے سوالنامے بھی اداسی اور مایوسی کے ساتھ پر کیا تھا۔

لڑکے کے پیٹ میں درد ۔۔۔ پیٹ سے کیا نکلا …؟

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس عمل کے علاوہ بھی ہمارے سامنے بہت سے ایسے رجحانات آئے ہیں جو سوشل میڈیا کے منفی اثرات کو ظاہر کرتے ہیں۔ اس سے پہلے بھی کئی ماہرین نے اس طرح کے تجربات کیے ہیں اور اپنے اپنے مختلف نتائج پیش کیے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہم نے براہ راست اس بات کا ثبوت حاصل کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر کم لائکس ملنے پر آج کل کے نوجوان مایوسی اور ڈپریشن کا شکار ہو جاتے ہیں لیکن ماہرین نے کہا کہ ہم نے تجربات اور اپنا ریسرچ عمل مکمل کرنے کے بعد ان نوجوانوں کو بتایا کہ ہم نے یہ پورا سلسلہ کمپیوٹر کے ذریعے کنٹرول کیا تھا۔

کیونکہ ہم اس بات کا ثبوت حاصل کرنا چاہتے تھے اور ہم اس تجربے سے اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ جس بچے کو جتنے کم لائکس ملتے ہیں اس کا ڈپریشن بڑھ جاتا ہے اور وہ دماغی تناؤ کا شکار بھی رہتا ہے۔

ماہرین کہتے ہیں کہ انسان کا لڑکپن اور جوانی کا دور بہت نازک ہوتا ہے اور اس عمر میں کوئی بھی منفی تاثر ان کے ذہن پر بہت گہرا اثر ڈالتا ہے اسی لئے آج کل کے والدین کو چاہیے کہ وہ اپنے بچوں میں خود اعتمادی پیدا کرنے کی کوشش کریں ۔

(Visited 27 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں