کٹھ پتلی حکومت سے بات کرنا گناہ سمجھتی ہوں، مریم نواز

Loading...

کوئٹہ: پاکستان مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ حکومت سے بات کرنا گناہ سمجھتی ہوں، بیک ڈور ڈپلومیسی کی عادی نہیں ہوں، یہ حکومت جمہوری طریقے سے ہی گرے گی۔ ہماری تحریک سے مارشل لاء لگنے کا امکان نہیں۔

کوئٹہ میں پی ڈی ایم کے جلسہ کی تیاریاں مکمل، سیکیورٹی انتہائی سخت

کوئٹہ میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کی سینئر نائب صدر مریم نواز کا کہنا تھا کہ ریاست کا فرض ہے ناراض لوگوں کو سنیں، ناراض لوگوں کو قومی دھارے میں لے کر چلنے سے ملک مستحکم ہوگا۔

بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب چیزیں غلط ہونگی تو آوازیں اٹھیں گی۔ حقیقی سیاسی جماعتیں عوامی ردعمل کے خلاف نہیں جائیں گی۔ بلاول بھٹو کے کوئٹہ آنے کے حوالے سے کچھ نہیں کہہ سکتی

سینئر نائب لیگی صدر کا کہنا تھا کہ ہم انتظار کیا کہ یہ لوگ حکومت کیسے کرتے ہیں مگر یہ ناکام ہوئے۔ اب لوگوں کو پتہ چلا کہ مافیا کیا ہوتا ہے۔ اب اس حکومت کا عوام کے سامنے ٹھہرنا مشکل ہے۔ کٹھ پتلی حکومت سے بات گناہ سمجھتی ہوں۔

Loading...

مریم نواز کا کہنا تھا کہ بیک ڈور ڈپلومیسی کی عادی نہیں ہوں، یہ حکومت جمہوری طریقے سے ہی گرے گی۔ جنہوں نے بلوچستان میں ماں باپ پارٹی بنائی انہیں حساب دینا ہوگا۔ اسمبلیوں میں اگر استعفے دیدئے تو حکومت کام تمام ہو جائے گا۔ ہماری تحریک سے مارشل لاء لگنے کا کوئی امکان نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک دوسرے کو سڑکوں پر گھسیٹنے کی باتیں ماضی کا حصہ ہیں۔ آزمائے ہوئے لوگ مارشل لاء نہیں لگا سکتے۔

(Visited 18 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں