کرونا وائرس سے متاثرہ ممالک میں امریکا پہلے نمبر پر آ گیا

ڈونلڈ ٹرمپ

واشنگٹن: امریکا میں کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد نے چین اور اٹلی کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے،

امریکی صدر نے بڑا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ 4 افراد پر مشتمل خاندان کو 3 ہزار ڈالرز ماہانہ دیے جائیں گے۔
تفصیلات کے مطابق امریکا میں کرونا وائرس سے متاثرین کی تعداد 82 ہزار 594 ہو گئی ہے، جب کہ ہلاکتوں کی تعداد 1300 ہو گئی، دوسری طرف 1868 مریض صحت یاب بھی ہو چکے ہیں۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ زیادہ ٹیسٹ ہونے کے ساتھ تعداد میں اضافہ بھی دیکھنے میں آ رہا ہے، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کرونا ٹاسک فورس کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ روزانہ کی بنیاد پر زیادہ سے زیادہ لوگوں کے ٹیسٹ کرا رہے ہیں، لوگ جلد از جلد کاموں پر واپس آنا چاہتے ہیں۔

ٹرمپ نے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 4 افراد پر مشتمل خاندان کو 3 ہزار ڈالرز ماہانہ دیں گے، موجودہ صورت حال سے بے روزگار ہونے والوں کا مکمل خیال کریں گے، کاروباری افراد کے لیے آسان قرضوں کا بندوبست کیا جا رہا ہے۔

آئی ایم ایف اور عالمی بینک کا پاکستان سمیت کورونا سے متاثرہ ممالک کی فوری مدد کا اعلان

امریکی صدر نے ایک بار پھر دہرایا کہ مجھے ٹوٹا ہوا سسٹم ورثے میں ملا، کبھی سوچا بھی نہ تھا کہ ایسی صورت حال کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ایئرلائنز اور ریسٹورینٹس کا کاروبار بہت مشکل میں ہے، ہمیں اپنی ایئرلائنز اور ریسٹورینٹس کے کاروبار کو جاری رکھنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دنیا جانتی ہے کہ کرونا وائرس چین سے آیا، میرے اقتدار میں آنے سے پہلے چین نے امریکا سے بہت فائدہ اٹھایا، کرونا کو چینی وائرس اس لیے کہتا ہوں کیوں کہ کرونا چین سے آیا، آج چین کے صدر سے بات کروں گا۔

(Visited 33 times, 1 visits today)

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں