عالمی مارکیٹ کے حساب سے پاکستان میں پٹرول اب بھی سستا ہے: عمر ایوب

عمر ایوب
Loading...

اسلام آباد : حکومت کی جانب سے گزشتہ روز پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد سے عوام میں شدید ردعمل دیکھنے کو مل رہا ہے جس پر وزرا کی وضاحتیں بھی سامنے آرہی ہیں۔وفاقی وزیر برائے توانائی عمر ایوب بھی اس معاملے پر چپ نہ رہے۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر بیان داغا کہ “گزشتہ ماہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اچانک اضافہ ہوگیا جب کہ روپے کی قدر بھی دوسے تین روپے کم ہوگئی۔ وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں اضافے اور روپے کی قدر میں کمی کو قرار دیا ہے۔

اعدادوشمار کے مطابق پیٹرول کی فی لٹر قیمت میں 31روپے اضافہ بنتا تھا تاہم حکومت نے 25.58فی لٹر کیا جب کہ ڈیزل کی قیمت میں اضافہ 24.31روپے فی لٹر بنتا تھا مگر حکومت نے 21.31روپے فی لٹر کیا ہے”۔

وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں اضافے اور روپے کی قدر میں کمی کو قرار دیا ہے۔

Loading...

حکومت نے پیٹرول کی فی لیٹر قیمت میں 25 روپے سے زائد اضافہ کردیا

ٹوئٹر پر جاری بیان میں عمر ایوب نے کہا کہ گزشتہ ماہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں خاطر خواہ اضافہ ہوا اور ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں بھی 3 روپے کمی ہوئی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری منظور کرلی جس کے بعد وزارت خزانہ نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا

(Visited 20 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں