امریکن ماہرین نے کرونا وائرس کے متعلق نئی ریسرچ پیش کردی….!

عالمی ادارہ صحت نے
Loading...

امریکن ماہرین نے کرونا سے متعلق کی جانے والی نئی ریسرچ میں اب اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ یہ خطرناک وائرس انسان کے پورے جسم کو شدید متاثر کرتا ہے.

امریکن ماہرین نے اپنی ریسرچ جاری کرتے ہوئے یہ کہا ہے کہ عام طور پر یہ سمجھا جا رہا تھا کہ کرونا وائرس سے انسان کے پھیپھڑے متاثر ہوتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہے اس وائرس سے انسان کی جسم کے تمام اعضاء متاثر ہو جاتے ہیں.

ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس سے انسان کے دل کی دھڑکن اور اس کے علاوہ اعصابی نظام اور معدے کو بھی متاثر ہوتے ہیں. کرونا وائرس انسان کے جسم میں خون کے لوتھڑے بنانا شروع کر دیتا ہے.

Loading...

کرونا وائرس کی پیش گوئی کرنے والے سائنسدان نے ایک نئی پیش گوئی کردی …!

جس کی وجہ سے انسا میں ہارٹ اٹیک کا خطرہ بڑھ جاتا ہے اور دل کی دھڑکن بھی متاثر ہوتی ہے. ماہرین کا مزید کہنا ہے کہ ڈاکٹرز کو چاہیے کہ وہ کرونا وائرس کے مریضوں کے پھیپھڑوں کے علاج کے ساتھ ان کے دل اور اعصابی نظام کا بھی علاج کریں تاکہ کرونا وائرس ان کے جسمانی خلیوں کو تباہ نہ کر سکے.

امریکن ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ کرونا وائرس شوگر کے مریضوں کے لئے بھی انتہائی خطرناک ہے اور ان کی جان خطرے میں ڈال دیتا ہے.

لہذا ماہرین کو چاہیے کہ وہ صرف پھیپھڑوں کا علاج نہ کریں بلکہ انسان کے دوسرے جسمانی اعضاء کا بھی معائنہ کریں

(Visited 45 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں