May 9, 2021

آج کل

Daily Aajkal News site

ایسی پراسرار جھیل جہاں نامعلوم خزانہ محفوظ ہے

کامرناگ جھیل زمین کی ان بہت سی جگہوں میں سے ایک ہے جو اپنی خوبصورتی اور نامعلوم خزانے کی وجہ

سے انسانی عقل کو حیران کر سکتی ہے۔ یہ کوئی معمولی جھیل نہیں بلکہ ایک ایسی جھیل ہے جس کی تہہ

 میں بے حساب دولت ذخیرہ ہے۔

کامرناگ جھیل، ہماچل پردیش کی سرزمین منڈی میں واقع ہے ، کامرناگ جھیل انسانی روح کیلئے نخلستان سے کم نہیں ہے۔ فطرت سے محبت کرنے والوں کے لئے اس جھیل کے آس پاس بہت سے خوبصورت مناظر موجود ہیں۔

یہ جھیل یکشوں کے بادشاہ کے اعزاز میں بنائی گئی تھی جس کا ذکر  مہا بھارت میں ملتا ہے۔ یہ دوسرا پانڈاوا بھائی جو کہ طاقتور شہزادہ بھیما تھا ، جس نے یہ جھیل بنائی۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یکشاس زمین کے مختلف مقامات پر پوشیدہ دولت کے آسمانی محافظ سمجھے جاتے ہیں۔ اس عقیدے کو دیکھتے ہوئے لوگ جھیل کا دورہ کرتے ہیں ، اور انہیں یقین ہے کہ وہ یکشا کی رہائش گاہ ہے۔

کامرناگ جھیل میں لوگ برکتوں کے لئے مقدس پانیوں میں سونے اور چاندی کو پھینکا  کرتے ہیں۔مقامی لوگ بارش کے دیوتا کی حیثیت سے کامرناگ دیوتا کی پوجا کرتے ہیں ، اور اسی وجہ سے جھیل کے قریب ایک مندر بھی تعمیر کیا گیا ہے تاکہ لوگ یہاں عبادت کرٰیں۔ کامرناگ مندر کی جھیل سے قربت کی وجہ سے اسے اس نام سے موسوم کیا گیا ہے۔ ہر سال جون کے مہینے میں عازمین پیشی دیوتا کی پرستش کے لئے کامرناگ مندر جاتے ہیں۔

وقت گزرنے کیساتھ ساتھ ایک بہت بڑی تعداد میں دولت جھیل کے اندر جمع ہو چکی ہے۔ در حقیقت یہ بالکل ویسے ہی ہے جیسے کوئی نہیں جانتا ہے کہ تری وندرم کے پیڈمنیبھا سوامی مندر کے پراسرار والٹ بی کے اندر کیا ہے۔ کوئی بھی جھیل کی تہہ پر پڑی ہوئی صحیح دولت کا پتہ لگانے کی ہمت نہیں کر سکتا ۔ بہت سارے لوگ اس جگہ پر جاتے ہیں اور دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لئے عقیدت سے دولت پیش کرتے ہیں۔  تاہم آج کل یہ خیال کیا جا رہا ہے کہ کامرناگ جھیل کو کئی دہائیوں سے چوروں کے ہاتھوں لٹنے کی کوشش کی ہو رہی ہے لیکن محافظین کے دیوتاؤں کے ذریعہ یہ کوششیں رائیگاں گئی ہیں ، جیسا کہ مقامی لوگوں کا خیال ہے۔