شطرنج کیسے ایجاد ہوئی؟ جانئیے

شطرنج کی ایجاد کے متعلق ایک کہانی بیان کی جاتی ہے۔ جو کافی دلچسپ اور حیران کن ہے، لیکن اس کے حقیقی ہونے کے بارے میں تصدیق نہیں کی جاسکتی۔ کیونکہ بعض ماہرین کے مطابق شطرنج کا کھیل سب سے پہلے چین میں ایجاد ہواتھا۔ اور بعض اس کی ایجاد کا کریڈٹ کچھ دوسرے ممالک کو بھی دیتے ہیں۔

جبل حفیت روڈ دنیا کا تیسرا زیادہ فوٹو گرافر کا سفر کیسے بنا؟

بہرحال سب سے مشہور یہ ہی ہے کہ شطرنج کا کھیل چھٹی صدی عیسوی میں ہندوستان میں ہی ایجاد ہوا۔ اور مسلمانوں کی ہندوستان میں فتوحات کے ساتھ ہی عرب دنیا میں یہ کھیل پہنچا اور بعض ازاں پوری دنیا میں یہ کھیل مشہور ہو گیا۔

چھٹی صدی عیسوی میں بھارت میں ایک بادشاہ رہتا تھا۔وہ کھیل کھیلنےسے بہت زیادہ شوق رکھتا تھا۔وہ تمام پرانے کھیلوں سے اکتا چکا تھا اور وہ کوئی نیا کھیل چاہتا تھاجو کہ بہت زیادہ مشکل اور سوچنے والا ہو۔

بادشاہ نے پوری ریاست میں اعلان کر دیا کہ جو کوئی اس کو نیا کھیل بنا کردےگا جس کو کھیلنے میں صلاحیت اور دماغ کی ضرورت ہو تو اس کو منہ مانگا انعام دوں گا۔بہت سے لوگوں نے بادشاہ کو مختلف کھیل پیش کئے لیکن بادشاہ مطمئن نہیں ہوا کیوں کہ وہ کوئی مشکل اور چیلنج والا کھیل چاہتاتھا۔

آخر کار ہمسایہ ریاست سے ایک غریب ریاضی دان جسکا نام شاید (چترنگا) تھا۔ اس نے بادشاہ کے سامنے ایک کھیل پیش کیا جسکا اس نے نام چترنگ بتایا۔جو کہ اب بگڑ کر شطرنج ہوگیا ہے۔اس میں دو فوجوں کو آمنے سامنے کرکے ایک بورڈ کے اوپر کھیلا جاتا ہے۔

شطرنج کے 64 خانے ہوتے ہیں۔ جس میں بادشاہ۔وزیر۔ہاتھی۔گھوڑا۔توپ۔پیادہ ہوتے ہیں۔ ہر کھلاڑی کی چالیں مختلف ہوتی ہیں۔ جس کا بادشاہ مارا جائے وہ ہار جاتا ہے۔

بادشاہ اس دلچسپ کھیل کو دیکھ کر بہت خوش ہوا۔ اور اس نےاس غریب ریاضی دان سے اس کی خواہش پوچھی ۔ اس نے کہا میری صرف یہ خواہش ہے کہ آپ مجھے اس کھیل کے بورڈ کے پہلے خانے پر چاول کا ایک دانہ د ے دیں اور دوسرے خانے پر دو گنا یعنی 2دانے اور تیسرے خانے پر پچھلے خانے سے دگنا کردیں یعنی 4 دانے اسی طرح ہر خانے کو پچھلےخانے سےدگنا کرکے دے دیں۔بادشاہ نے کہا اتنی چھوٹی خواہش ۔ تم کوئی ہیرے جواہرات اور سونا چاند ی کیوں نہیں مانگتے۔ اس نے کہا میری بس یہ ہی خواہش ہے جس کو آپ پورا کردیں تو آپ کی نوازش ہوگی۔

بادشاہ نے فورا اپنے درباریوں کو حکم دیا کہ اس کو اس کی خواہش کے مطابق چاول دے دیئے جائیں۔لیکن اگلے ہی دن اس کے درباری اور وہ غریب ریاضی دان دربار میں دوبارہ حاضر ہوئے اور درباریوں نے کہا بادشاہ سلامت ہم آپ کی پوری سلطنت کو بیچ کر بھی اس ریاضی دان کی خواہش پوری نہیں کر سکتے۔ بادشاہ نے جب حساب لگایا ۔تو بادشاہ اس ریاضی دان کی ذہانت پر حیران رہ گیا۔ کہ اس کی خواہش کو پورا کرنا واقعی ناممکن ہے۔

بادشاہ نے اس ذہین ریاضی دان کو اپنامشیر خاص بنا لیا۔ یہ کہانی ہوسکتا ہے سچ نہ ہو کیوں کہ بعض لوگوں کا ماننا ہے کہ شطرنج کی پیدائش چین میں ہوئی۔لیکن چترنگ نامی کھیل ہندوستان کی تاریخی کتابوںمیں بہرحال ضرور ملتا ہے۔

Leave a Reply