ماہرین نے جھوٹ پکڑنے کا ایک اور طریقہ دریافت کر لیا

ماہرین نے جھوٹ پکڑنے کا ایک اور طریقہ دریافت کر لیا

فرانس کی سوربون یونیورسٹی کے ماہرین نے ایک دلچسپ تجربہ کیا ہے جس میں صرف آواز کی شدت اور جھوٹ کے درمیان تعلق واضح کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق اس تحقیق کیلئے فرانسیسی قومی مرکز برائے سائنسی تحقیق نے بھی کلیدی کردار کیا۔ تجربے کے دوران معلوم ہوا کہ آواز کی پچ، بولنے کی شرح اور شدت بھی بتا سکتی ہے کہ بولنے والا جھوٹ بول رہا ہے یا سچائی سے کام لے رہا ہے ۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کسی کی آواز میں غنایت اس کے سچ بولنے کی معلومات دے سکتی ہے ۔

ہوٹل کے کمروں میں لگے خفیہ کیمروں کو کیسے ڈھونڈا جاسکتا ہے؟

ایسا یوں ہوتا ہے کہ دماغ زبان کا ساتھ نہیں دے پاتا اور آواز دھیمی ہوتی جاتی ہے اور یوں الفاظ پر زور بھی کم ہوجاتا ہے کیونکہ بولنے والا جانتا ہے کہ وہ غلط بیانی کررہا ہے ۔اس کیفیت کو پروسوڈی بھی کہا جاتا ہے جس میں الفاظ اور جملوں کے بجائے آواز کے زیر و بم کو دیکھا جاتا ہے ۔

Leave a Reply