نامور اداکارہ عارفہ صدیقی نے خود سے 30 سال بڑے شخص سے کیوں شادی کی؟

Loading...

دنیا کی نظر میں یہ ایک بے جوڑ شادی ہے،اپنے سے 30 سال بڑے استاد سے شادی رچانے کی کیا وجہ ہو سکتی ہے؟ آئیے جانتے ہیں۔۔۔

ریپ جیسے موضوعات پر اتنے زیادہ ڈرامے نہیں بنائے جانے چاہیے، نوین وقار

شکل و صورت کے حساب سے استاد نذر حسین بالکل بھی وحید مراد ، محمد علی اور دلیپ کمار سے دور تک مشابہت نہیں رکھتے۔نامور کالم نگار طاہر سرور میر اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں کہ عموما شوبز سے وابسطہ افراد روپے پیسے کے پجاری ہوتے ہیں اسی لئے اپنے مستقبل کو محفوظ بنانے کیلئے وڈیروں، جاگیرداروں اور صنعتکاروں سے خفیہ شادی رچا لیتے ہیں۔ لیکن اس شادی میں ایسی کوئی بات نہیں ہے۔

عارفہ صدیقی نے ریڈیو لاہور میں استاد نذر کو گاتے سنا تو اسے ایسا محسوس ہواکہ جیسے سب کچھ تھم گیا ہو۔ استاد کے سروں کا جادو چل گیاان کی روح اور دل ودماغ اس سے سوال کررہے تھے کیا کوئی ایسے بھی گا سکتا ہے؟؟اس نے اسی لمحے فیصلہ کرلیاکہ وہ سب کچھ چھوڑ دے گی۔لائم لائٹ، اسٹارڈم اور روپے پیسے کوٹھکرانا آسان نہیں ہوتا لیکن اس نے سب کچھ چھوڑ کر استاد سے شادی کی اور گوشہ نشینی اختیار کرلی ۔

استاد اور اداکارہ 26 سال تک ایک ساتھ رہے اور پھر موت نے یہ رشتہ توڑ ڈالا۔ یہ فلم اور ڈرامے کی کہانی نہیں بلکہ اداکارہ عارفہ صدیقی اور استاد نذر حسین کی زندگی کا سچ ہے۔ عارفہ صدیقی جیسی باصلاحیت, خوبصورت اورمقبول فنکارہ کی زندگی میں یہ تبدیلی کیسے آئی ؟

نامور کالم نگار طاہر سرور میر لکھتے ہیں کہ میں یہ دعویٰ نہیں کرتا کہ اس ٹرانسفارمیشن کے روحانی اور نفسیاتی پہلوئوں سے مکمل آگاہی رکھتا ہوں مگرمیں نے عارفہ صدیقی کو قریب سے دیکھا ہے۔ شاید وہ جوار بھاٹے عشق سمندر میں غرق ہونے کے اشارے تھے جو میں نے دیکھے تھے۔

loading...

مختلف ٹی وی ڈراموں میں عارفہ نے فردوس جمال، عابد علی اور قوی خان جیسے مستند ادا کاروں کے سامنے جاندار پرفارمنس سے اپنے آپ کو منوا لیا تھا۔ میرا جگری دوست ببوبرال اور برادرم سہیل احمد اس وقت تک اسٹارز نہیں بنے تھے مگر دونوں عارفہ کے بہت قریب تھے۔ ببوبرال تو عارفہ کے عشق میں بری طرح مبتلا تھا۔ میں نے کئی مرتبہ ببو برال سے کہا۔ ۔ لگتاہے یہ لو اسٹوری ون وے ہے۔ وہ فنکاروں کی فنکار جانی گئی، سبھی اس کے گن گاتے تھے، عارفہ صدیقی چھوٹی عمر میں ایک برینڈ بن چکی تھی۔ دور حاضر کی مہوش حیات, صباقمر اور ماہرہ خان میں کوئی بھی ایسی نہیں جسے آج کی عارفہ صدیقی قرار دیا جاسکے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ عارفہ جتنی عمدہ اداکارہ تھی اتنی ہی اچھی گلوکارہ بھی تھی۔

عارفہ نے اپنے چند سال کے کیرئیر میں ٹی وی اور تھیٹر کے ساتھ ساتھ فلم کی بڑی اسکرین پر بھی کامیابیاں سمیٹیں اور پھر استا د نذر سے شادی کرکے اپنی چکاچوند زندگی سے کنارہ کشی اختیار کرلی۔ پاکستان ٹیلی وژن کی انتظامیہ نے 80 کی دہائی کے آغاز میں میڈم نورجہاں سے گانے کی درخواست کی تو ملکہ ترنم نے شرط عائد کردی کہ اگر ان کے لئے استاد نذر ان کیلئے کمپوزیشن کریں گے تو وہ گائیں گی۔

استاد 82 سال کی عمر میں پھیپھڑوں کے سرطان کے باعث اس دنیا سے رخصت ہوئے۔ ان کی موت کی خبر پولیس مقابلہ مفرور افسر اور اس اینکر پرسن کی اندھا دھند خبروں کے سامنے گم ہوگئی جس نے زینب کے بہیمانہ قتل سے ریٹنگ بٹورنے کی کوشش کی۔

(Visited 54 times, 1 visits today)
Loading...
Advertisements

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں